پیغمبرِ اسلام حضرت محمد مصطفیٰ صلی اللہ علیہ و آلہ وسلم کی مدحت، تعریف و توصیف، شمائل و خصائص کے نظمی اندازِ بیاں کو نعت یا نعت خوانی یا نعت گوئی کہا جاتا ہے۔عربی زبان میں نعت کیلئے لفظ "مدحِ رسول" استعمال ہوتا ہے۔ اسلام کی ابتدائی تاریخ میں بہت سے صحابہ اکرام نے نعتیں لکھیں اور یہ سلسلہ آج تک جاری و ساری ہے۔ نعتیں لکھنے والے کو نعت گو شاعر جبکہ نعت پڑھنے والے کو نعت خواں یا ثئاء خواں بھی کہا جاتا ہے۔

Wednesday, 4 March 2015

MUNAJAT- TU NAWAZNE PE AAYE

Allah Allah Allah Allah Allah Allah

Tu nawazne pe aaye to nawaz de zamane...
Tu kareem hi jo thehra to karam k kya thikane...

Tu afw h maaf frma ay Ra.heem reham farma...
Dhunde h teri rehmat bakhshish k soo bahane...

Tu benishan nhi h sb me nishan tera...
Subh k hon ujale ya sham k fasane...

Mere doobne me baqi na koi kmi rhi thi...
Kaha almadad khudhaya to ubhar gya safeena...

Tu hi awwal tu hi aakhir yu hi zahir tu hi batin...
Tu azeem h itna teri shan k kya kehne...

Posted by BINTE ISHRAT

No comments:

Post a Comment